فلسطینی نژاد امریکی صحافی شیریں ابو اکلیح کی موت کی امریکی تحقیقات ‘اہم قدم’: اہل خانہ

الجزیرہ کی صحافی شیرین ابو اکلیح کے اہل خانہ نے جو ممکنہ طور پر ایک اسرائیلی فوجی کے ہاتھوں ہلاک ہوئی تھی ، نے منگل کے روز اس کی موت کی تحقیقات شروع کرنے کے امریکی فیصلے کی تعریف کی۔

فلسطینی-امریکی خاندان کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ “یہ ایک اہم قدم ہے”، جس میں “حقیقی آزاد، قابل اعتماد اور مکمل تحقیقات” کی امید ظاہر کی گئی ہے۔

ابو اکلیح 11 مئی کو مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کے چھاپے کی کوریج کے دوران مارا گیا تھا۔

الجزیرہ کی تجربہ کار رپورٹر نے “پریس” کے نشان والی بلٹ پروف جیکٹ اور ہیلمٹ پہنے ہوئے تھے جب انہیں جینین پناہ گزین کیمپ میں سر میں گولی ماری گئی، جو اسرائیل اور فلسطین تنازعہ کا ایک تاریخی فلیش پوائنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *