انگلینڈ کرکٹ ٹیم کی آمد سے قبل سیکیورٹی کا جائزہ لینے کے لیے اجلاس ہوا۔

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے لانگ مارچ کی وجہ سے جہاں انگلش کرکٹ ٹیم کے آئندہ دورے میں رکاوٹ پیدا ہونے کے خدشات موجود ہیں، وہیں اسلام آباد پولیس نے کرکٹ ٹیم کے سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا ہے اور اس بات کو یقینی بنایا ہے کہ سیریز میں کوئی رکاوٹ نہیں آئے گی۔ سیاسی انتشار کی وجہ سے متاثر ہو رہے ہیں۔

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ یکم دسمبر سے 5 تک راولپنڈی میں کھیلا جائے گا۔ دوسری جانب پی ٹی آئی کا لانگ مارچ 26 نومبر کو راولپنڈی پہنچنے کا امکان ہے اور اسے دھرنے میں تبدیل کیا جا سکتا ہے جو کئی روز تک جاری رہ سکتا ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل 2014 میں پی ٹی آئی کا دھرنا 126 دن تک جاری رہا جس سے جڑواں شہروں کے مکینوں کی روزمرہ کی سرگرمیاں متاثر ہوئیں۔ کرکٹ اسٹیڈیم اگرچہ راولپنڈی میں ہے لیکن یہ وفاقی دارالحکومت کے علاقے سے متصل ہے۔

مزید یہ کہ کرکٹ ٹیمیں عام طور پر اسلام آباد میں رہتی ہیں اور جڑواں شہروں کے درمیان روزانہ کی بنیاد پر سفر کرتی ہیں۔ انگلش ٹیم 27 نومبر کو پاکستان پہنچے گی۔

اگرچہ انگلش کرکٹ بورڈ کی سیکیورٹی ٹیم پہلے ہی سیکیورٹی صورتحال پر اطمینان کا اظہار کرچکی ہے اور ٹیم کو رخصت دے چکی ہے لیکن حالیہ پیشرفت نے کئی سوالات کو جنم دیا ہے اور اسٹیک ہولڈرز میں خوف کی فضا پیدا کردی ہے۔

اس سلسلے میں انسپکٹر جنرل آف پولیس (آئی جی پی) نے ایک میٹنگ کے دوران انگلش کرکٹ ٹیم کے آئندہ دورے کے لیے سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا۔

ایک پولیس اہلکار کے مطابق اجلاس میں سیکورٹی کے مجموعی انتظامات پر تبادلہ خیال اور جائزہ لیا گیا۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اسلام آباد کیپٹل پولیس فول پروف سیکیورٹی کو یقینی بنانے کے لیے راولپنڈی پولیس کے ساتھ مکمل کوآرڈینیشن برقرار رکھے گی جبکہ ٹیم کے روٹس کی ڈیجیٹل ٹیکنالوجی اور ڈرون کیمروں کے ذریعے نگرانی کی جائے گی۔

سیکیورٹی پر 1200 سے زائد اہلکار تعینات ہوں گے جبکہ سی پی او (سیکیورٹی) اس سے متعلق تمام امور کی نگرانی کریں گے۔

سی پی او (آپریشنز) ان کے ساتھ مکمل ہم آہنگی کو یقینی بنائے گا جبکہ چیف سیکیورٹی آفیسر کرکٹ ٹیم کے ساتھ قریبی رابطہ برقرار رکھنے اور قانون اور نفاذ کے دیگر محکموں کے ساتھ کسی بھی اہم معلومات کا تبادلہ کرنے کے لیے تعینات کیا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *